عالم اسلام کے لیے خوشخبری، مسجد نبوی جانا ہے تو بس چند اہم شرائط پر عمل کرنا ہوگا

ماہ رمضان میں مسجد نبوی میں داخلے کے لیے سعودی حکومت کی جانب سے نیا ضابطہ اخلاق جاری کردیا گیا ہے۔ جس کے تحت کورونا ویکسین کی دو خوراکیں لینا بنیادی شرط ہے۔ اس کے علاوہ مسجد میں اس سال سحری اور افطاری کے اجتماعات نہیں ہوسکیں گے۔ اعتکاف پر بھی پابندی ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت کی جانب سے ماہ رمضان میں مسجد نبوی میں داخلے کا نیا ہدایت نامہ جاری کردیا گیا ہے۔ جس کے تحت سعودی شہری جو کورونا کی دو خوراکیں لے چکے ہیں یا کم از کم ایک خوراک لیے دوہفتے کا وقت گزر چکا ہے۔ ایسے افراد کو مسجد نبوی میں داخلے کی اجازت ہوگی۔ سعودی حکام نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مسجد نبوی آنے والوں کی ویکسی نیشن کی معلومات توکلنا ایپ کے ذریعے حاصل کی جائے گی۔

خبر جاری ہے۔۔۔

یاد رہے کہ مسجد میں اس سال افطار صرف پانی اور کھجور تک محدود رہے گا۔ سحری کے لیے سامان تقسیم کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ سعودی حکومت کی جانب سے روزہ داروں میں ایک لاکھ آب زم زم کی بوتلیں تقسیم کرنے کی تیاری کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ مسجد نبوی کی پرانی عمارت میں ساڑھے چار سو قالین بچھائے گئے ہیں۔ جن کی سینیٹائزنگ ہر نماز کے بعد کی جائے گی۔ اس سال اعتکاف کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ نمازیوں کو بھی نئے صحن تک محدود کیا گیا ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

تاہم دن کی روشنی میں نمازیوں کو گروپ کی شکل میں آنے کی پابندی سے استثنیٰ حاصل رہے گی۔ مسجد نبوی کے حکام نے خبردار کیا ہے کہ 15 سال اور اس سے کم عمر افراد کو داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ دوسری جانب زائرین کی صحت و سلامتی کا خیال کرتے ہوئے سینیٹائزنگ کے لیے سمارٹ روبوٹ کا اہتمام کیا گیا ہے۔ جس سے مقررہ وقت میں سینیٹائزنگ کا عمل مکمل کرنے میں مدد ملے گی۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!