پاکستانی روپے کے سامنے امریکی ڈالر ڈھیر ہوگیا، 22 ماہ کی کم ترین سطح پر فروخت ہونے لگا

پاکستانی روپیہ امریکی ڈالر کے سامنے قدم جمانے لگا۔ امریکی ڈالر 152 روپے 95 پیسے پر فروخت ہونے لگا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی معیشت کے میدان سے اچھی خبریں آنے لگیں۔ امریکی ڈالر پاکستانی روپے کے سامنے گھٹنے ٹیکنے لگا۔ 22 ماہ کی کم ترین سطح پر آگیا۔ ماہرین معاشیات کے مطابق پاکستان کے کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی اور ملکی معیشت میں بہتری ڈالر کے سامنے روپے کی قدر کو مستحکم کرنے میں مددگار ثابت ہوئی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

انٹربینک میں لگاتار دوسرے روز ڈالر کی قدر میں کمی ہوئی ہے۔ آج ڈالر کی قدر میں 23 پیسے کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔ جس کے بعد ڈالر کی نئی قیمت 152 روپے 95 پیسے ہوگئی ہے۔ جو کہ 22 ماہ کی کم ترین سطح ہے۔ فاریکس ڈیلرز کا ماننا ہے کہ بیرون ملک سے ڈالرز کی آمد میں اضافہ اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں نمایاں کمی ڈالر کی قدر کم کرنے کے اہم محرکات ہیں۔

خبر جاری ہے۔۔۔

اس کے علاوہ آئی ایم ایف منصوبہ دوبارہ شروع ہونا بھی اس کی ایک وجہ مانی جارہی ہے۔ دوسری جانب ماہرین معاشیات کی جانب سے اس اقدام کو پاکستانی معیشت کے لیے احسن قدم مانا جارہا ہے۔ جس سے امید کی جارہی ہے کہ پاکستان کی گرتی معیشت کو سنبھلنے کا موقع مل جائے گا۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!