پاکستان : کورونا کی لہر بےقابو ہوگئی، مثبت کیسز کی شرح کے نئے ریکارڈ نے شہریوں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

پاکستان میں کورونا کی شدید لہر نے عوام کا جینا محال کردیا ہے۔ سرکاری سطح پر جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق ملک میں مجموعی کیسز کی تعداد 7 لاکھ 21 ہزار سے زائد ہوچکی ہے۔ گزشتہ چوبیس گھنٹے میں اموات کی تعداد 114 تک پہنچ چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کو اس وقت کورونا کی تیسری اور شدید ترین لہر کا سامنا ہے۔ ملک بھر میں اس وقت کورونا کیسز کی شرح 10 اعشاریہ 96 فیصد تک پہنچ چکی ہے۔ جو کہ ایک نیا ریکارڈ ہے۔ اس نے ملکی سطح پر خطرے کی نئی گھنٹی بجا دی ہے۔ این سی او سی کی جانب سے جاری کردہ حالیہ اعدادوشمار کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران ملک میں 5 ہزار 50 مزید کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ جس کے بعد ملک میں مجموعی کیسز کی تعداد 7 لاکھ 21 ہزار 18 تک پہنچ چکی ہے۔ اسی دورانیے میں ملک میں 114 افراد کورونا کی وجہ سے جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ جس کے بعد ملک بھر میں کورونا سے مجموعی اموات کی تعداد 15 ہزار 443 تک پہنچ چکی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

این سی او سی کے مطابق ملک میں 46 ہزار 66 ٹیسٹ کیے گئے۔ جس کے بعد کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 10 اعشاریہ 96 فیصد تک پہنچ چکی ہے۔ دوسری جانب پشاور انتظامیہ نے شہر کے بیشتر علاقوں میں مائیکرو سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ لاک ڈاؤن کے دوران مختلف علاقوں میں داخلے اور نکلنے پر پابندی ہوگی۔ یاد رہے کہ پاکستان میں اس وقت کورونا کے ایکٹو کیسز کی تعداد 73 ہزار سے زائد ہے۔ جن میں سے 4 ہزار 204 مریض انتہائی تشویشناک حالت میں وینٹی لیٹر پر منتقل کیے جاچکے ہیں۔ ملک بھر میں 6 لاکھ 27 ہزار 561 افراد نے کورونا کو شکست دی اور صحت یاب ہوئے۔ اسی طرح سندھ میں 2 لاکھ 68 ہزار 284 مریضوں نے خطرے کی گھنٹی بجادی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

سندھ میں ہی کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 4 ہزار 523 تک پہنچ چکی ہے۔ اسی طرح پنجاب مجموعی کیسز کی تعداد 2 لاکھ 46 ہزار کے نزدیک پہنچ چکی ہے۔ جبکہ پنجاب میں مجموعی ہلاکتیں 7 ہزار کے لگ بھگ ہوچکی ہیں۔ کے پی میں مریض 97 ہزار 318 اور ہلاکتیں 2 ہزار 586 ہوچکی ہیں۔ اسی طرح وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 65 ہزار کے لگ بھگ مریض ہوچکے ہیں۔ یہاں ہلاکتوں کی تعداد 600 سے زائد ہوچکی ہیں۔ اسی طرح آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان میں بھی ہزاروں کورونا کیسز موجود ہیں۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!