لاہورکے شہری ہوجائیں ہوشیار!!!مہنگائی میں پسی عوام پر تبدیلی سرکار نے انوکھا پٹرول بم گرانے کی تیاری مکمل کرلی

مہنگائی میں پسی عوام کے لیے ایک بری خبر آگئی۔ تبدیلی سرکار نے لاہور کے شہریوں کے لیے پیٹرول پر انوکھا ٹیکس لگانے کی تیاری کرنے لگی۔

تفصیلات کے مطابق تبدیلی کی دعویدار حکمران جماعت نے پاکستان کو تبدیل کرکے رکھ دیا ہے۔ نئے پاکستان میں مہنگائی کا جو طوفان برپا ہے وہ کسی صورت تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ پاکستانی عوام کو آئے روز مہنگائی کی نئی لہر کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ تاہم اب مہنگائی میں پسی غریب عوام کے لیے ایک اور مہنگائی کا جن بوتل سے باہر نکلنے کو تیار ہے۔ تبدیلی سرکار نے انوکھی منطق پیش کرتے ہوئے عوامی سہولت کی اورنج لائن اور میٹرو بس پر سبسڈی کا بوجھ بھی عوام پر ڈالنے کی تیاری کرلی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

لاہور کی عوام پر گیسولین ٹیکس عائد کی تجویز زیرغور ہے۔ ٹیکس عائد ہونے کے بعد پیٹرول کی فی لٹر قیمت میں 1 سے 2 روپے تک اضافہ ہوجائے گا۔ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کی جانب سے لاہور کی حدود میں پیٹرول کی قیمت میں اضافے کی سفارش کی گئی ہے۔ ٹیکس کے نفاذ کے بعد پیٹرول پمپ کا رخ کرنے والے شہریوں کو فی لیٹر پیٹرول پر 1 سے 2 روپے اضافی ادا کرنے ہوں گے۔ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی مجوزہ ٹیکس کو ملتان اور راولپنڈی میں بھی نافذ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

اس پر اتھارٹی کی جانب سے انوکھی منطق پیش کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس طرح عوام پبلک ٹرانسپورٹ کے استعمال کی جانب مائل ہوگی۔ مذکورہ سفارشات حکومت کو ارسال کردی گئی ہیں تاہم ان پر تاحال کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ یاد رہے کہ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کو حکومت سالانہ 12 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کررہی ہے۔ جس میں سے 8 ارب روپے صرف اورنج لائن پر ادا کیے جارہے ہیں۔ مذکورہ ٹیکس کے نفاذ سے حکومت سالانہ ایک ارب روپے سے زائد حاصل کرسکے گی۔ تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ تبدیلی سرکار پہلے ہی مہنگائی کا جن قابو میں لانے میں ناکام رہی ہے۔ اگر حکومت کی جانب سے مذکورہ ٹیکس نافذ کردیا گیا تو حکومت عوامی ردعمل کو برداشت کرنے کی پوزیشن میں نہیں رہے گی۔

خبر جاری ہے۔۔۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!