سعودی عرب میں قید پاکستانیوں کے لیے خوشخبری، وزیراعظم کا دورہ سعودی عرب ان کی رہائی کا پروانہ ہوسکتا ہے!

سعودی عرب میں تعینات نئے پاکستانی سفیر لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ بلال اکبر کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کا دورہ سعودی عرب قیدیوں کی رہائی سے متعلق بہت اہم ہے۔ بہت قیدیوں کو رہائی مل سکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان رواں ماہ سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔ اس دورے میں جہاں دیگر کئی اہم امور پر بات چیت کی جائے گی۔ وہاں پاکستانیوں قیدیوں کی سعودی جیل سے رہائی کے دیرینہ مسئلے پر بھی اجلاس منعقد کیا جائے گا۔ یا یوں کہا جائے کہ وزیراعظم کا دورہ کئی پاکستانیوں کی رہائی کا پروانہ ہوگا تو غلط نہ ہوگا۔ اس حوالے سے سعودی عرب میں تعینات پاکستان کے نئے سفیر لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ بلال اکبر نے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ پاکستانی شہریوں کی آسانی کے لیے سفارتخانے میں ہیلپ لائن قائم کررہے ہیں جو 24 گھنٹے کام کرے گی۔ اس ہیلپ لائن پر شہری اپنی شکایات درج کرواسکیں گے۔ اس کے علاوہ کمیونٹی اشتراک سے پروگرام بھی شروع کیے جائیں گے۔ جن کا مقصد عوام کو آگاہی دینا اور ان کے مسائل کا حل بتانا ہوگا۔

خبر جاری ہے۔۔۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ وزیراعظم دورہ سعودی عرب کے دوران 3 اہم یادداشتوں پر دستخط کریں گے۔ جس کے بعد قیدیوں کی رہائی سے متعلق اہم اجلاس منعقد کیا جائے گا۔ پاکستانی حکومت سعودی حکومت کے تعاون سے قیدیوں کی رہائی کے معاملے کو تیز کردے گی۔ واضح رہے کہ پاکستانی وزیراعظم عمران خان 7 سے 10 مئی تک سعودی عرب کا سرکاری دورہ کریں گے۔ اس دورے کی خواہش کا اظہار عمران خان نے سعودی سفیر نواف سعید المالکی سے ہونے والی ملاقات کے دوران کیا تھا۔

خبر جاری ہے۔۔۔

اس ملاقات میں شاہ محمود قریشی اور دیگر اہم عہدیدار بھی شریک تھے۔ وزیراعظم نے روزہ رسول پر حاضری کی خواہش ظاہر کی تھی۔ حکومت کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کا دورہ سعودی عرب طے کردیا گیا ہے۔ اس دورے کے دوران وزیراعظم سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سمیت اہم حکومتی عہدیداران سے ملاقات کریں گے۔ اس کے علاوہ عمرہ کی ادائیگی اور روزہ رسول ﷺ پر حاضری بھی دیں گے۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!