پی پی رہنما قادرمندو خیل نے بڑے دل کا مظاہرہ کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان کو معاف کرنے کا اعلان کردیا

قادر مندوخیل نے گزشتہ روز نجی ٹی وی کے پروگرام میں معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کی بدتمیزی پر انہیں معاف کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی پی رہنما قادر مندو خیل کی جانب سے بڑے دل کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اگر فردوس عاشق اعوان ان سے معافی مانگ لیتی ہیں تو وہ انہیں معاف کرنے کو تیار ہیں۔ یاد رہے کہ گزشتہ شب سینئر صحافی جاوید چودھری کے پروگرام میں معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان اور پیپلز پارٹی کے رہنما عبدالقادر مندوخیل میں تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا تھا۔ جس کے بعد بات ہاتھا پائی تک پہنچ گئی۔ فردوس عاشق اعوان نے پی پی رہنما کو گریبان سے پکڑا اور تھپڑ بھی مارا۔

اتنی ہنگامہ آرائی کے بعد بھی قادر مندوخیل نے اعلان کیا ہے کہ اگر فردوس عاشق اعوان ان سے معافی مانگ لیتی ہیں تو وہ ان کو معاف کرنے کو تیار ہیں۔ انہوں نے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے فردوس عاشق کو کوئی گالی نہیں دی۔ اس کے باوجود معاون خصوصی ڈھٹائی پر تلی ہوئی ہیں اور عدالت جانے کی دھمکی دے رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بتانا چاہتا ہوں کہ قانونی راستہ وہ بھی اختیار کرسکتے ہیں۔ تاہم یہ فیصلہ قیادت کی مشاورت سے کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کی خواتین اس وقت ان کے ساتھ ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے جب معاون خصوصی نے پروگرام میں بدتمیزی کی ہو۔ وہ اس سے پہلے بھی متعدد مرتبہ ایسا کرچکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب دلیل نہیں بچتی تو غصہ اور گالی اس کی جگہ لے لیتی ہے۔ ایسا ہی پروگرام کے دوران ہوا۔ معاون خصوصی کو کرپشن یاد دلائی تو انہوں نے گالی دی اور ان کا گریبان پکڑ لیا۔ یہ پروگرام ختم ہونے کے بعد بھی ان کے پیچھے آئیں اور انہیں کہا کہ ادھر آؤ کدھر جارہے ہو۔ انہوں نے کہا کہ فردوس عاشق اعوان کے بارے میں سن رکھا تھا لیکن اندازہ نہیں تھا کہ وہ اس حد تک گر سکتی ہیں۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!