وی آئی پی کلچر کا خاتمہ ایک خواب بن گیا، تبدیلی سرکار کے وزیر روایتی سیاستدانوں کی ڈگر پر چل پڑے، سوشل میڈیا صارفین کی شدید تنقید

اگر ہم سے بہت زیادہ ترقی یافتہ ملک کا وزیر اپنی چھتری اٹھاتے کوئی عار محسوس نہیں کررہا تو پاکستان جیسے غریب ملک کا وزیر اپنی شرم کیوں محسوس کررہا ہے؟ سوشل میڈیا صارفین برہم

تفصیلات کے مطابق تبدیلی سرکار نے وی آئی پی کلچر ختم کرنے کے بلند بانگ دعوے کیے اور حکومت میں آگئی۔ اس سے قبل تحریک انصاف کی جانب سے متعدد مرتبہ وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز اٹھائی گئی اور ماضی کی حکومتوں کو اس کلچر کے فروغ کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے اسے ختم کرنے کا دعویٰ کیا جاتا رہا۔ تاہم اب تبدیلی سرکار کی تبدیلی بھی ہوا ہوچکی ہے۔ اس جماعت کے اپنے وزراء ماضی کی ڈگر پر چل رہے ہیں۔ اس کی ایک تازہ مثال وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے قائم کی ہے جو آج کل سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے تنقید کی زد میں آئے ہوئے ہیں۔

خبر جاری ہے۔۔۔

ہوا کچھ یوں کہ روس کےو زیرخارجہ دوروزہ دورے پر پاکستان پہنچے تو اس وقت بارش ہورہی تھی۔ شاہ محمود قریشی ان کے استقبال کے لیے ایئرپورٹ پر پہنچے تو ان کی چھتری ایک ملازم نے تھام رکھی تھی۔ دوسری جانب ترقی یافتہ ملک روس کا وزیرخارجہ جب جہاز نے نکلا تو اس نے اپنی چھتری خود تھام رکھی تھی۔ یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہی ہے۔ سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے وزیر خارجہ کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

صارفین کی جانب سے کافی قسم کے تبصرے کیے گئے۔ ان میں سے ایک صارف نے لکھا کہ ایک طرف پاکستان سے کہیں زیادہ ترقی یافتہ ملک کا وزیر ہے جو اپنی چھتری خود پکڑتے شرم محسوس نہیں کررہا جبکہ دوسری جانب قرضوں میں ڈوبا انتہائی غریب ملک پاکستان کا وزیر ہے جو اپنی چھتری اٹھاتے شرم محسوس کررہا ہے۔ یہ دونوں ملکوں کی ترقی کا معیار ہے۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!