پاکستانی خاتون نے تاریخ رقم کردی ،سونیا مجید امارات کا قومی ترانہ گانے والی پہلی ایشیائی خاتون بن گئیں

امارات کا قومی ترانہ گانے والی خاتون سونیا مجید کا تعلق پاکستان کے شہر لاہور سے ہے۔ اماراتی شاہی خاندان کی جانب سے خاتون کے لیے تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ ساتھ میں ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

تفصیلات کے مطابق زندہ دلان کے شہر لاہور سے تعلق رکھنے والی سونیا مجید نے امارات کا قومی ترانہ گا کر منفرد اعزاز اپنے نام کرلیا ہے۔ وہ ایشیا کی پہلی خاتون بن گئی ہیں جنہوں نے امارات کا قومی ترانہ گایا۔ ان کی اس اعزاز کا اعتراف کرتے ہوئے اماراتی حکومت نے انہیں ایوارڈ بھی عطا کیا ہے۔ ڈیلی گلف اردو سے خصوصی گفتگوکے دوران سونیا مجید نے کہا کہ وہ ایشیا کی پہلی خاتون ہیں جنہوں نے امارات میں قومی ترانہ پڑھا ہے اور وہ اس اعزاز پر کافی خوش ہیں۔

خبر جاری ہے۔۔۔

انہوں نے بتایا کہ وہ گزشتہ 20 سال سے دبئی میں مقیم ہیں اور ان کا تعلق زندہ دلوں کے شہر لاہور سے ہے۔ تاہم وہ دبئی کو اپنا دوسرا گھر قرار دیتی ہیں اور اس سے بےپناہ محبت کرتی ہیں۔ انہوں نے اپنے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ انہیں مختلف زبانیں سیکھنے اور موسیقی سے خاص لگاؤ ہے۔ اس کے علاوہ وہ مختلف قسم کے نئے کھانے بہت پسند کرتی ہیں۔ ‘امارات میں قومی ترانہ پڑھنے پر مجھے ہر پلیٹ فارم پر پذیرائی مل رہی ہے، صرف ٹک ٹاک پر 30 لاکھ سے زائد ویڈیوز بن چکی ہیں۔ میں اپنے سپورٹ کرنے والوں کی شکرگزار ہوں۔’

خبر جاری ہے۔۔۔

انہوں نے کہا کہ ان کے لیے یہ اعزاز ہے کہ شاہی خاندان کی جانب سے انہیں ایک ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔ دراصل قومی ترانہ میرے ملک کے باشندوں کی جانب سے یواےای سے یکجہتی کا ایک انداز تھا۔ انہوں نے مستقبل کے منصوبوں پر بات کرتے ہوئے کہا کہ مستقبل قریب میں ان کے 3 گانے ریلیز ہورہے ہیں۔ جن میں صوفی، ہپ پاپ اور ٹرانس نمبر شامل ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ بہت جلد بالی وڈ سے ان کی ایک فلم بھی ریلیز ہوگی جس کا عنوان سالم مدرسہ ہے جو کہ اقوام متحدہ کے تعاون سے مکمل کی گئی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!