”کرفیو کے اوقات میں باہر آنے والوں کو ریڈارز کی مدد سے پکڑا جائے گا، جرمانے بھی ہوں گے“ ابوظبی حکومت کا اعلان

ابوظبی حکومت کی جانب آج کے روز سے رات کے وقت کے جزوی کرفیو کا اعلان کیا گیا ہے۔روزانہ رات 12 بجے سے صبح 5 بجے تک پانچ گھنٹوں کا کرفیو عائد ہو گا۔ جس دوران کسی کو بھی گھر سے نکلنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ ابوظبی کی حکومت نے کرفیو پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے سخت اقدامات اٹھانے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس مقصد کے لیے ریڈار فعال کر دیئے گئے ہیں جو نیشنل سٹیریلائزیشن پروگرام کے وقت گھر سے نکلنے والے افراد کی نشاندہی کریں گے۔ ان افراد پر جرمانے بھی عائد ہوں گے۔ ابوظبی پولیس نے کہا ہے کہ لوگ ان پانچ گھنٹوں کے دوران ہرگز گھروں سے باہر نہ نکلیں ورنہ جرمانے بھُگتنے کے لیے تیار رہیں۔

ابوظبی پولیس کے مطابق کرفیو کے ان پانچ گھنٹوں کے دوران لوگوں کے باہر نکلنے پر پابندی کے ساتھ ساتھ تمام قسم کی ٹریفک بھی بند رہے گی اور ٹرانسپورٹیشن سروسز بھی معطل رکھی جائیں گی۔ ابوظبی ایمرجنسی، کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ کمیٹی کی جانب سے اتوار کو بتایا گیا ہے کہ جو افراد انتہائی ضرورت کے پیش نظر یا خوراک اور ادویات خریدنے کی خاطر ان ممنوعہ اوقات میں باہر نکلنا چاہیں گے، انہیں اس مقصد کے لیے خصوصی آن لائن پرمٹ حاصل کرنا ہوگا۔ یہ پرمٹ صرف اسی روز کے لیے قابل قبول ہوگا۔ پرمٹ حاصل کرنے کے خواہش مندوں کو ابوظبی پولیس کی ویب سائٹ پر جانا ہوگا۔


ابوظبی پولیس کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ تمام لوگوں کو کرفیو کی پابندی پر عمل کرنا ہو گا اس حوالے سے روزانہ الرٹ جاری نہیں کیا جائے گا۔ یہ سٹیریلائزیشن مہم مملکت سے کورونا وبا کے خاتمے کی خاطر شروع کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ کرفیو کے اوقات کے دوران ریاست بھر کے سرکاری دفاتر، عوامی مقامات اور دیگر جگہوں پر جراثیم کش محلول کا سپرے کیا جائے گا۔اس کے علاوہ دیگر ریاستوں سے آنے والوں پر بھی پی سی آر اور ڈی پی آئی ٹیسٹ سے متعلق شرائط میں سختی کر دی گئی ہے۔دیگر ریاستوں سے ابوظبی آنے والوں کو انٹری پوائنٹس پر روک کر ان کی پی سی آر ٹیسٹ رپورٹ کی نیگیٹو رپورٹ چیک کی جائے گی۔ ابوظبی داخلے کے وقت اس رپورٹ کو جاری ہوئے 48 گھنٹوں سے زائد وقت نہ گزرا ہو۔ ورنہ دوبارہ سے ٹیسٹ کروا کر ہی نیگیٹو رپورٹ حاصل کرنی پڑے گی۔ان افراد کو ابوظبی میں چار دن سے زائد قیام پر چوتھے روز بھی پی سی آر ٹیسٹ کروانا لازمی ہوگا۔ جبکہ آٹھ روز یا اس سے زائد قیام کرنے کی صورت میں انہیں آٹھویں بھی پی سی آر ٹیسٹ کروانا ہو گا۔ تاہم جو افراد پی سی آر ٹیسٹ کی بجائے ڈی پی آئی ٹیسٹ کی نیگیٹو رپورٹ دکھا کر ابوظبی داخل ہوں گے، ان کی اس رپورٹ کو داخلے کے وقت جاری ہوئے 24 گھنٹے سے زائد وقت نہیں ہونا چاہیے، ورنہ ان کی یہ رپورٹ قابل قبول نہیں ہو گی۔ ڈی پی آئی ٹیسٹ دکھا کر ابوظبی آنے والوں کو اپنے قیام کے تیسرے روز اور پھر ساتویں روز بھی پی سی آر ٹیسٹ کروانا ہو گا۔
Source: Khaleej Times

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!