ابوظہبی: سٹرلائزیشن مہم کے تحت کورونا احتیاطی تدابیر کا نفاذ کردیا گیا، شہریوں کو سخت شرائط پر عمل درآمد کرنا ہوگا

دارالحکومت میں جانچنے کے لیے نئے قوانین کا اطلاق کیا گیا ہے۔ جس میں محدود نقل و حرکت، ٹیسٹنگ اینڈ انٹری رولز اور عوامی مقامات پر کم تعداد کا ہونا شامل ہے۔

تفصیلات کے مطابق ابوظہبی میں شاپنگ مالز، سپرمارکیٹس اور دیگر عوامی مقامات آدھی رات سے ایک گھنٹہ قبل بند کردیے جائیں گے تاکہ عوام پیر کو لاگو ہونے والے محدود نقل و حرکت کے قوانین سے قبل گھر پہنچ جائیں۔ پبلک بس سروس بھی رات 10 بجے کے بعد بند کردی جائے گی اور کچھ شہری جو نئے قوانین کے نفاذ سے لاعلم تھے وہ سڑکوں پر بسوں کا انتظار کرتے پائے گئے۔

ابوظہبی میں نئے کورونا ایس اوپیز 19 جولائی کو عیدالاضحیٰ کی پہلی چھٹی کے دن سے لاگو کیے گئے ہیں۔ سویپنگ میئرز کو ابوظہبی ایمرجنسی، کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر کمیٹی کی جانب سے جاری کیا گیا ہے۔ جس میں محدود نقل وحرکت، ٹیسٹنگ اینڈ انٹری رولز اور مالز، سینیماز اور دیگر عوامی مقامات پر کم تعداد شامل ہے۔ ابوظہبی میں رات کے وقت راڈارز بھی حرکت میں آجائیں گے۔ جن کے تحت شہریوں کو سٹرلائزیشن پروگرام کے تحت گھر میں رکھا جائے گا۔

نئے قوانین کے مطابق محدود نقل وحرکت رات 12 بجے سے صبح 5 بجے تک رہے گی۔ ابوظہبی پولیس نے کہا ہے کہ ریڈارز شہریوں کوجرمانے عائد کرنے کے لیے استعمال کیے جائیں گے۔ ایسے افراد جنہیں اشیائے ضروریہ یا ادویات لینے کے لیے گھر سے نکلنا ہوگا۔ وہ ابوظہبی کی ویب سائٹ پر پہلے خصوصی پرمٹ کے لیے اپلائی کریں گے۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!