اماراتی شہریوں کو اس سال کتنا فطرانہ دینا ہوگا؟ حکومت نے اعلان کردیا

فطرانہ عطیہ کی ایک قسم ہے جو ماہ رمضان کے اختتام سے قبل غریب عوام کی خدمت کے لیے کی جاتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں اس سال فطرانے کی رقم 20 درہم متعین کی گئی ہے۔ یہ ایک قسم کا عطیہ ہے جو ماہ رمضان کے اختتام سے چند روز قبل غریب عوام کی مدد کے لیے کیا جاتا ہے۔ تاہم عوام انفرادی طور پر 20 درہم سے زیادہ بھی دے سکتی ہے۔ ہمارے نبی حضرت محمد ﷺ کا فرمان ہے کہ وہ تمام مسلمان جو اپنی استطاعت سے زیادہ پر دسترس رکھتے ہیں۔ ان سب پر فطرانہ لازم ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

گھر کے سربراہ پر لازم ہے کہ وہ ایسے تمام افراد کے حصے کا بھی فطرانہ ادا کرے جو ابھی تک برسرروزگار نہیں ہیں۔ زکوٰۃ فنڈ کی شریعت کمیٹی کا کہنا ہے کہ کورونا کی موجودہ صورتحال کی وجہ سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ منتخب حکام اور عطیہ کرنے والی تنظیمیں عطیہ کرنے والوں کی جگہ لوگوں میں رقوم اور کھانے کی اشیاء تقسیم کریں گی۔

خبر جاری ہے۔۔۔

حکام کی جانب سے اماراتی شہریوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ اپنے فطرانہ کی رقم زکوٰۃ فنڈ میں جلد از جلد جمع کروادیں۔ یاد رہے کہ یہ فنڈ مرحوم شیخ زید بن سلطان النہیان کی جانب سے قائم کیا گیا تھا۔ واضح رہے کہ فطرانے کی رقم یکم رمضان سے لیکر عیدالفطر کی نماز کی ادائیگی سے قبل تک ادا کی جاسکتی ہے۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!