ایک اور اماراتی ریاست نے ریسٹورنٹس اور کیفیز پر اہم پابندی عائد کر دی

متحدہ عرب امارات میں کورونا وبا پر قابو پانے اور کیسز کو محدود کرنے کے لیے رواں ماہ کے دوران اہم ترین پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔ اب ایک اور اماراتی ریاست نے اسی نوعیت کی پابندیوں کا اعلان کر دیا ہے۔ عجمان کی حکومت نے ریسٹورنٹس اور کیفیز کو احکامات جاری کیے ہیں کہ اب وہ اپنے فوڈ پوائنٹس جلد بند کر دیا کریں گے۔ عجمان ایمرجنسی، کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ٹیم نے اعلان کیا ہے کہ آئندہ سے ریاست میں واقع تمام ریسٹورنٹس اور کیفیز رات 11 بجے تک بند کر دیئے جائیں گے۔ ان فوڈ پوائنٹس کو گیارہ بجے کے بعد کھُلا رکھنے کی ہرگز اجازت نہیں ہو گی، ورنہ ان کے خلاف تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

خبر جاری ہے۔۔۔

ایمرجنسی، کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ٹیم کے اعلان کے مطابق ریسٹورنٹس اور کیفیز پر اس پابندی کا اطلاق آج 23 فروری بروز منگل کی رات سے ہی ہو گا۔ وقت کی اس پابندی کے نفاذ کا مقصد کورونا وبا پر قابو پانے کی خاطر لیے جانے والے احتیاطی اقدامات کو موثر بنانا ہے۔ مینجمنٹ ٹیم کا کہنا ہے کہ رات گیاہ بجے ریسٹورنٹس اور کیفے ٹیریاز بند کرنے کی پابندی ان پر لاگو نہیں ہو گی جو فاسٹ فوڈ فراہم کرتے ہیں۔ اسی طرح ڈلیوری سروسز مہیا کرنے والوں کو بھی رات گیارہ بجے کے بعد کاروبار کرنے کی اجازت ہو گی۔ اس سے پہلے عجمان میں ریسٹورنٹس اور کیفیز کو 12 بجے تک کھُلا رکھنے کی اجازت تھی۔ جس میں اب ایک گھنٹے کی کمی کر دی گئی ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

واضح رہے کہ2 فروری سے دُبئی حکومت نے ہنگامی نوعیت کے فیصلے کرتے ہوئے کئی اہم پابندیاں لگا دی ہیں۔جن کے تحت پب/ بارز مکمل طور پر بند کر دی گئی ہیں۔ ان ڈور مقامات پر لوگوں کی موجودگی کی گنجائش گھٹا کر 50 فیصد کر دی گئی ہے، جن میں سینماز، تفریحی اور سپورٹس مقامات بھی شامل ہیں۔ اس کے علاوہ ان مقامات پر کورونا سے بچاؤ کے لیے ایس او پیز پر سختی سے عمل بھی کروانا ہو گا۔ تمام ریسٹورنٹس اور کیفیز رات ایک بجے بند کر دیئے جائیں گے۔ ان فوڈ پوائنٹس پر کسی بھی قسم کی تفریحی سرگرمی کی بھی اجازت نہیں ہو گی۔ تمام ہوٹلز میں کُل گنجائش کے صرف 70 فیصد افراد کو داخلے کی اجازت ہو گی۔ نئی بکنگ کرتے وقت گنجائش کی مقرر کردہ نئی حد کو بھی سامنے رکھنا ہو گا۔
Source: Khaleej Times

خبر جاری ہے۔۔۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!