اماراتی حکومت نے مملکت واپس آنے والے رہائشیوں کے لیے قوانین میں مزید نرمی کا اعلان کردیا

متحدہ عرب امارات نے عالمی ادارہ صحت سے منظور شدہ ویکسین کی 2 خوراکیں لگوانے والے شہریوں کو مملکت میں داخلے کی اجازت دیدی ہے۔ اطلاق پابندی کے شکار ممالک کے شہریوں پر بھی ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں بہت سے سفری قوانین میں نرمی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جس کا مقصد بیرون ممالک میں پھنسے ویزا ہولڈرز کو واپس بلانا ہے۔ 12 ستمبر سے ایسے افراد جنہوں نے عالمی ادارہ صحت کی جانب سے تجویز کردہ ویکسین کی 2 خوراکیں لگوا رکھی ہیں اور وہ گزشتہ 6 ماہ سے پابندی کے شکار ممالک میں پھنسے ہونے کی وجہ سے مملکت سے باہر ہیں۔ تو وہ نئے انٹری پرمٹ کے ذریعے مملکت میں واپس آسکتے ہیں۔ قوانین میں یہ نرمی دبئی کے علاوہ دیگر تمام امارات کے لیے کی گئی ہیں۔ کیونکہ دبئی پہلے ہی اپنے رہائشیوں کے لیے قوانین میں نرمی کرچکا ہے۔ جس کے تحت پاکستان سمیت دیگر پابندی کے شکار ممالک سے آںے والے افراد کو ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ دکھانے کی ضرورت نہیں ہے۔ اس کے علاوہ دبئی کے حکام 20 اپریل سے قبل ایکسپائر ہونے والے افراد کے ویزوں میں توسیع بھی کرچکی ہے۔

مزید تفصیلات جاںيے۔۔۔

فیڈرل اتھارٹی برائے شناخت اور شہریت اور نیشنل ایمرجنسی کرائسز اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے مشترکہ بیان میں کہا گیا تھا کہ یواےای اپنے تمام رہائشیوں کو داخلے کیا اجازت دیتا ہے۔ تاہم اس کے لیے عالمی ادارہ صحت سے منظورہ شدہ ویکسین کی دو خوراکیں لگوانا ضروری ہے۔ اس فیصلے کے تحت پاکستان سمیت دیگر کئی ممالک کے شہری یواےای میں داخل ہونے کے اہل ہوگئے تھے۔
نئے پرمٹ کے لیے کیسے اپلائی کیا جاسکتا ہے؟
مملکت میں داخل ہونے والے مسافروں کو فیڈرل اتھارٹی برائے شناخت اور شہریت کی ویب سائٹ پر ویکسی نیشن کی درخواست کو اجازت کے لیے پر کرنا ہوگا۔ جس کے لیے ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ دکھانا ضروری ہوگا۔

مسافر کو پی سی آر ٹیسٹ کی منفی کاپی دکھانا ہوگی۔ جس کا دورانیہ 48 گھنٹے سے زائد نہ ہو۔ اس کاپی کے ساتھ کیوآر کوڈ ہونا ضروری ہے اور اسے مملکت کی جانب سے منظور شدہ لیبارٹری سے کروانا ہوگا۔ مسافروں کو ایئرپورٹ پر پرواز سے قبل ایک ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ سے گزرنا ہوگا۔ اس کے علاوہ مملکت میں داخلے کے وقت چوتھے اور آٹھویں دن بھی پی سی آر ٹیسٹ کے ساتھ تمام احتیاطی تدابیر اپنانا ہوں گی۔ 16 سال اور اس سے کم عمر کے بچوں کو قوانین سے استثنیٰ حاصل ہوگا۔ ایسے افراد جنہوں نے عالمی ادارہ صحت کی جانب سے منظور شدہ ویکسین لگوا رکھی ہے۔ اور وہ گزشتہ 6 ماہ سے زائد عرصہ سے پابندی کے شکار ممالک میں سے کسی میں رہ رہے ہیں۔ تو وہ نئے انٹری پرمٹ پر ملک میں داخل ہوسکتے ہیں۔

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!