دُبئی پولیس نے بھکاریوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا، کئی پاکستانی بھکاری بھی گرفتار

دُبئی پولیس کی جانب سے رمضان کی آمد سے چند روز قبل ہی بھکاریوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا گیا ہے تاکہ رمضان کے دوران ان پیشہ ور بھکاریوں کی گنتی پر قابو پایا جا سکے۔ یہ کریک ڈاؤن حکومتی اور مقامی اداروں کے اشتراک سے کیا جا رہا ہے۔ گداگری ختم کرو کے نام سے جاری اس مہم کے تحت لوگوں کو گداگری کے خاتمے کے لیے ساتھ دینے سے متعلق آگاہی مہم بھی شروع کی گئی ہے۔ دُبئی پولیس کے کریمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ (CID) کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر جمال سالم الجلاف نے بتایا ہے کہ گزشتہ تین برسوں کے دوران 842 گداگر پکڑے گئے ہیں جن کا تعلق مختلف ممالک سے ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

بریگیڈیئر جلاف نے کہا کہ گداگری ایک سماجی لعنت ہے کیونکہ یہ گداگر لوگوں کی سخاوت کا ناجائز فائدہ اُٹھاتے ہیں جو کہ رمضان کے مہینے میں بہت بڑھ جاتی ہے۔ پولیس کی جانب سے گداگری کو جڑ سے اُکھاڑنے کے لیے کارروائی تیز کر دی گئی ہے۔ ادارہ برائے اسلامی امور، GDRFA اور دُبئی میونسپلٹی کی جانب سے مل کر گداگری کے خلاف مہم کو کامیاب بنانے کا جتن کیا جا رہا ہے۔

خبر جاری ہے۔۔۔

دوسری جانب سی آئی ڈی ڈیپارٹمنٹ کےInfiltrators شعبہ کے ڈائریکٹر کرنل علی سالم نے کہا ہے کہ رجسٹرڈ فلاحی ادارے ضرورت منداور مستحق اماراتی شہریوں اور تارکین وطن کی بھرپور امداد کرتے ہیں۔ اگر کوئی شخص خود کو مستحق ثابت کردے تو اسے ضروری مالی امداد دی جائے گی۔ تاہم عوامی مقامات اور سڑکوں بازاروں میں بھیک مانگنے والوں کو ہرگز قبول نہیں کیا جائے گا۔ ان افراد کو گرفتار کرنے کے بعد سخت سزا بھی دی جائے گی۔ لوگوں کو چاہیے کہ وہ کسی بھی گداگر کو دیکھیں تو فوری طور پر ٹول فری نمبر 901 پر اطلاع دیں، اس کے علاوہ ‘Police Eye’ ، یا ای کرائم پلیٹ فارم www.ecrime.ae پر بھی شکایت کی جا سکتی ہے۔ اماراتی وفاقی قانون کے تحت گداگری ایک سنگین جُرم ہے جس پر قید اور جرمانے کی سزا بھُگتنی پڑتی ہے۔
Source: Khaleej Times

Show More

Related Articles

Back to top button
error: Content is protected !!